بھارتی فوج نے کشمیری فٹبالر عامر سراج کو جعلی مقابلے میں شہید کر دیا

حريت رہنماء حميد لون کا کہنا تھا کہ بھارت دہشت گردی کا الزام لگا کر نوجوانوں کو قتل کر رہا ہے۔ فٹ بالر جولائی 2020 سے لاپتہ تھے۔ غلام محمد خان سوپوری نے سری نگر میں بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی فوج گذشتہ کئی دہائیوں سے مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا ارتکاب کر رہی ہے اور روزانہ کی بنیاد پر بے گناہ کشمیری نوجوانوں کو ہلاک کر رہی ہے۔7 دہائیوں سے اپنے حق خود ارادیت کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں

ریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشال ملک نے واقعے کی پرزور مذمت کرتے ہوئے اپنے ویڈیو پیغام میں عالمی برادری سے بھارتی فوج کی درندگیوں پر نوٹس لینے کا مطالبہ کیا


kashmiri footballar killed by india army in fake terror

اپنا تبصرہ بھیجیں