عمران خان جنوبی وزیرستان کے جوانوں کو کامیاب بنانے نکل پڑے

وزیراعظم کا وزیرستان میں تھری اور فور جی سروسز شروع کرنے کا اعلان ووٹ لینے یا الیکشن میں کیے جانے والے وعدے کرنے نہیں آیا بلکہ ہماری حکومت کی پوری کوشش ہے کہ پاکستان کے غریب طبقے کو اوپر اٹھایا جائے، جہاں انہیں تعلیم کی فراہمی دی جائے اور اسکول، کالجز، جامعات اور تکنیکی تعلیمی ادارے کھولے جائیں۔ 15 سال میں سب سے زیادہ تباہی وزیرستان میں ہوئی، لہٰذا یہاں کے نوجوانوں کو روزگار دینے کی بہت ضرورت ہے۔1947 میں جو مسلمانوں پر ظلم ہوا پنجاب اور کشمیر میں تو یہاں کے لوگ کشمیر میں لڑنے کے لیے گئے تھے، یہ اس علاقے کی ایک تاریخ ہے۔ 1965 کی جنگ میں یہاں سے بہت لوگ گئے اور ملک کے لیے آپ کا جذبہ جانتا ہوں۔ ہمارے دشمن بھارت میں ایک ایسی انتہا پسند حکومت ہے جو مسلمان اور پاکستانیوں کی دشمن ہے اور 73 سالہ تاریخ میں ایسا بھارتی وزیراعظم اور حکومت نہیں آئی۔ تھری اور فور جی کا مسئلہ بنا ہوا تھا کیونکہ اسے دہشت گرد بھی استعمال کرسکتے ہیں، تاہم میں نے اپنی سیکیورٹی ایجنسیز، جنرل قمر جاوید باجوہ اور جنرل فیض حمید سے بات کی۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے نوجوانوں کی ضرورت ہے اور ہم آج سے تھری اور فور جی بحال کردیں گے۔احساس پروگرام کے ذریعے غربت سے نیچے لوگوں کو پیسے دیں، خواتین کے لیے مویشی دیں تاکہ وہ آمدنی بڑھاسکیں جبکہ تعلیم میں مدد کرتے ہوئے اسکالرشپس بھی فراہم کریں۔


وزیراعظم عمران خان آج جنوبی وزیرستان میں تعمیروترقی کےمختلف منصوبوں کاآغاز اور کامیاب جوان پروگرام کاافتتاح کر دیا ایجوکیشن کا بھی اعلان وزیراعظم کے معاونین خصوصی عثمان ڈار، ثانیہ نشتر، شہبازگل ، علی امین گنڈاپور، خیبرپختونخوا کے گورنر اور وزیراعلیٰ بھی ان کے ہمراہ جبکہ عمران خان کیڈٹ کالج وانا کے دوسرے فیز کا سنگ بنیاد بھی رکھیں گے اور احساس کفالت پروگرام کےتحت چیک بھی تقسیم کریں گے۔ مقامی قبائلی عمائدین سے ملاقات کے ساتھ ساتھ مولاخان سرائےمیں اسپتال کا افتتاح بھی کریں گے۔

imran khan in pakistan waziristan development

اپنا تبصرہ بھیجیں